[Urdu Ghazal] Adat bana li ha – Parveen Shakir

Posted by:Zeshan

عادت ہی بنا لی ہے اس شہر کے لوگوں نے

انداز بدل لینا ، آواز بدل لینا

دنیا کی محبت میں اطوار بدل لینا

موسم جو نیا آئے رفتار بدل لینا

اغیار وہی رکھنا احباب بدل لینا
عادت ہی بنا لی ہے اس شہر کے لوگوں نئے
راستے میں اگر ملنا نظروں کو جھکا لینا
آواز اگر دو تو کترا کے نکل جانا
ہر ایک سے جدا رہنا ہر ایک سے خفا رہنا ہر ایک کا گلہ کرنا
جاتے ہوئے راہی کو منزل کا پتہ دے کر راستے میں رلا دینا
عادت ہی بنا لی ہے اس شہر کے لوگوں نے . . . !۔

Author: admin
Is An Online Platform For Latest Gist On News, Entertainment, Business Tips & Updates, Dating Tips, My School News And More To Explore From Us.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *